image image image image



المصطفیٰ کے سرپرست کے استقبالیہ

المصطفیٰ کے سرپرست کے استقبالیہ
المصطفیٰ انٹر نیشنل یونیورسٹی کے دفتر نمایندگی کے سرپرست کے استقبالیہ...
Full Story
  • 1
  • 2
  • 3
  • 4
  • 5
  • 6
  • 7
  • 8

Hadees

امام كاظم (علیه‌ السلام): مَنْ سَرَّ مُؤْمِناً فَبِاللهِ بَدَأ وَبِالنَّبِيِّ ثَنّی وَبِنا ثَلَّث    . جس شخص نی کسی مومن کو خوش کیا اس نی پهلی خدا کو خوش کیا.دوسری پیغمبراکرم(صلی الله علیه و آله)کو .تیسری هم اهلبیت کو. مستدرک الوسائل، ج 12، ص 399

خبریں

هندوستان میں خواتین کو با اختیار بنانے کا عمل ۔ایک جائزہ

 

المصطفیٰ انٹرنیشنل یونیورسٹی،نمایندگی ہندوستان سے وابستہ المصطفیٰ اسلامک ریسرچ سینٹرکے سماجی وثقافتی شعبہ کی جانب سے ہندوستان میں مختلف طبقات اور معاشروں میں مسلم خواتین کی تعلیمی حالت اور ان کی ترقی کیلئے انجام دئے گئے اقدامات کی صحیح صورتحال سے آگاہی کیلئے ہمدرد یونیورسٹی کے فیڈرل اسٹڈیز سینٹر کی مشارکت سے ایک روزہ سمیناربعنوان ”ہندوستان میں خواتین کو با اختیار بنانے کا عمل ۔ایک جائزہ “منعقد کیا گیا جسے ہندوستان میں علمی حلقوں اور خواتین کی ترقی کے لئے کام کرنے والے اداروں اور دانشور طبقہ کے درمیان بہت پذیرائی حاصل ہوئی ۔

Read more...

المصطفیٰ انٹر نیشنل یونیورسٹی اور سوشل سائنسیزانسٹیٹیوٹ انڈیا کے درمیان مفاہمتی قرارداد پر دستخط کے سلسلے میں منعقد ہ پروگرام کی رپورٹ

المصطفیٰ انٹر نیشنل یونیورسٹی اور سوشل سائنسیزانسٹیٹیوٹ انڈیا کے درمیان طے شدہ لائحہ کے مطابق 4جنوری 2012ءکوانسٹیٹیوٹ کے آڈیٹوریم میں مفاہمتی قرار داد کے سلسلے میں پروگرام منعقد کیا گیا ۔

Read more...

عالمی تقریب مذاہب اسلامی کونسل کے اعلیٰ سربراہی وفد کا المصطفیٰ انٹر نیشنل یونیورسٹی کے نئی دہلی میں واقع دفتر نمایندگی کا دورہ

ھندوستان میں المصطفیٰ انٹر نیشنل یونیورسٹی کے نمایندہ محترم کی دعوت پر حجة الاسلام والمسلمین جناب آقای موسوی کی سربراہی میں عالمی تقریب مذاہب اسلامی کونسل کے اعلیٰ سطحی وفد نے23جنوری 2012 دفتر نمایندگی کا دورہ کیا ،اس موقع پراسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر محترم جناب مہدی نبی زادہ ،کلچرل کونسلر جناب ڈاکٹر کریم نجفی اور کلچر ہاوس کے ڈائرکٹر جناب علی دہگاہی بھی وفد کے ہمراہ دفتر میں تشریف لائے۔

Read more...

بفضل خدا وند متعال المصطفی انٹر نیشنل یونیورسٹی کے شعبه تعلیم کی موافقت سے اور هندوستان میں المصطفی انٹر نیشنل یونیورسٹی کے دفتر نمایندگی کے ترقیاتی منصوبوں کو آگے بڑهانے کی غرض سی فقه واصول اور علوم قرآن وحدیث کے سبجیکٹ میں پہلاکارشناسی ارشد سطح کا ٹیست 29/1/2012 کو ایران کلچر هاوس میں صبح اور شام دو مرحلوں میں منعقد ہوا.

اس ٹیسٹ میں هندوستان بهر کے مدارس دینیه اور حوزه های علمیه سے تعلق رکهنے والے تقریبا 300 خواهشمندطلباء نے شرکت کی جن میں 50 خواهران تهیں .اس مجموعی تعداد میں سے قبولیت کیلئے لازمی نمبر حاصل کرنے والے 120 افرادپاس هونگےجن میں سے 60 کو هندوستان میں 5 منتخب مدارس میں المصطفی یونیورسٹی کے تحت تعلیم دی جائیگی اور 60 افراد  هندوستان میں المصطفی انٹر نیشنل یونیورسٹی کے دفتر نمایندگی کے زیر اهتمام مدیریت اسلامی اعلی تعلیمی مرکز میں تعلیم حاصل کریں گے

جھلکیاں المصطفی انٹرنیشنل یونیورسٹی نمایندگی هندوستان کی اهم

articlesالمصطفی یونیورسٹی میں کورسز کو دو حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے :

مختصر مدت نصاب اور طویل کورسز المدت.
دونوں
کورسز ان کی اپنی اہمیت اور اہمیت اور طالب علم کی ہر ضرورت کو سوٹ ہے.

 

articlesامام مصطفی یونیورسٹی میں ای لرننگ کا تصور اپنے میں ایک انقلابی نظریہ ہے.

امام مصطفی یونیورسٹی میں ای لرننگ کا تصور اپنے میں ایک انقلابی نظریہ ہے. یہ تازہ ترین techonology کے ساتھ جلد ہی شروع ہو جائے گا.


 

articlesداخلہ عمل امام مصطفی یونیورسٹی بھارت میں منصفانہ اور آسان ہے. داخلہ کے لیے معیار مندرجہ ذیل ہیں.

  1. یہ ایک ڈیمو معیار نمبر ایک ہے.
  2. یہ ایک ڈیمو معیار نمبر ایک ہے.
  3. یہ ایک ڈیمو معیار نمبر ایک ہے.

 

 

    Coming Soon...
    Coming Soon...

۹ افراد حرم امام رضا علیہ السلام میں شیعہ ہوئے

اس سال ماہ مبارک رمضان میں ۹ افراد نے حرم امام رضا علیہ السلام نے مذہب تشیع کو قبول کیا ہے۔

 حرم رضوی کے شعبہ تبلیغ اور اسلامی روابط کے معاون حجۃ الاسلام و المسلمین سید جلال حسینی نے بتایا ہے کہ امسال ماہ مبارک رمضان میں ۹ افراد حرم رضوی میں مذہب تشیع سے شرفیاب ہوئے ہیں۔

انہوں نے تاکید کی کہ شیعہ ہونے والے افراد میں سے زیادہ تر کی عمر پچس سال کے لگ بھگ تھی کہ جن میں سے تین افراد تاجکستان اور باقی سوڈان اور فرانس کے تھے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ ۹ افراد میں سے ۶ مرد اور تین خواتین تھیں جبکہ ان میں سے ایک عیسائی مذہب، ۶ افراد سنی مذہب اور ۲ سیکولاریزم سے کنورٹ ہوئے ہیں۔

حجۃ الاسلام حسینی نے اس بات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ جوانوں کو مذہب تشیع سے زیادہ لگاو ہے کہا: شیعہ ہونے والے افراد میں سے کم سے کم ۱۴ سال اور زیادہ سے زیادہ ۴۰ سال کے افراد تھے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ان افراد نے مذہب تشیع کے بارے میں پہلے سے تحقیق کر رکھی تھی اور مذہب تشیع کی مکمل شناخت کے بعد انہوں نے اس مذہب کو قبول کیا ہے۔منبع :اہلبیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔
 

Page 1 of 6

خبریں تازه

گیلری فوٹو